پگمی مارموسیٹ (فنگر مونکی)

پگمی مارموسیٹ (فنگر مونکی)

پگمی مارموسیٹ کرہ ارض کا سب سے چھوٹا بندر ہے۔ ان سب سے چھوٹے حقیقی زندہ بندروں کو فنگر بندر بھی کہا جاتا ہے۔ پگمی مارموسیٹ اس جانور کا عام نام ہے، اس کا سائنسی نام سیبوئلا پیگمیا ہے۔ اس کا تعلق سیبیڈا خاندان سے ہے اور یہ ممالیہ جانور ہیں۔ ایک نر اور ایک مادہ پگمی مارموسیٹ نسل زندگی بھر ساتھ رہتے ہیں۔
اس اقسام کے بالغ بندروں کا وزن 100 گرام سے زیادہ ہوتا ہے اور ان کے سر سے جسم کی لمبائی 117 سے 152 ملی میٹر اور دم کی لمبائی 172 سے 229 ملی میٹر ہوتی ہے، جس سے وہ دنیا کے سب سے چھوٹے پریمیٹ میں سے ایک بن جاتے ہیں۔ یہ منی بندر جنوبی امریکہ کے برساتی جنگلات کی چوٹیوں میں رہتے ہیں۔ یہ ذہین، متجسس اور زندہ دل چھوٹے نقاد ہیں اور انہیں جنوبی امریکہ میں دیکھ کر ہمیشہ خوشی ہوتی ہے۔ گلہری کی طرح، یہ درختوں کے تنے اور شاخوں کے نیچے چھپ جاتے ہیں 
ان مارموسیٹوں میں بھوری اور سیاہ رنگ کی پٹیوں کے مرکب کے ساتھ نارنجی بھوری کھال کا ایک کوٹ ہے۔ اس چھوٹے جانور کی کھال اسے چھپنے میں مدد دیتی ہے جب وہ درختوں کی شاخوں کے پار جاتے ہیں۔ اس بندر کے ناخن پنجوں کے طور پر کام کرتے ہیں جن سے وہ درخت پر چڑھتے وقت درخت کی چھال کو پکڑ سکتے ہیں۔  ان مارموسیٹوں کی گردن میں اضافی لچک ہوتی ہے جس کی وجہ سے یہ گردن کا رخ پیچھے کی طرف موڑ لیتے ہیں۔ یہ توازن کے لئے اپنی دم کا استعمال کرتا ہے 
  یہ مارموسیٹ دنیا کے سب سے چھوٹے بندر کی حیثیت سے اس لقب کا دعوی کرتا ہے۔ لیکن، یہ دنیا کا سب سے چھوٹا پریمیٹ نہیں ہے
یہ  5 سے 9 ارکان کا گروپ بنا کر رہتے ہیں۔ گروپسں میں رہنا ان چھوٹے جانوروں کو شکاریوں کے خلاف کسی حد تک تحفظ فراہم کرتا ہے۔ یہ شرمیلے جانور ہیں جو زیادہ تر وقت درختوں میں پوشیدہ رہتے ہیں۔ان جانوروں کی آوازیں کسی حد تک بھوری اور سرمئی گلہریوں کی آواز سے ملتی ہیں۔
 انھیں زندہ رہنے کے لئے بہت زیادہ کھانے کی ضرورت نہیں ہوتی  لہذا یہ درختوں کے پتے زیادہ کھاتے ہیں اس کے علاوہ پھل، تتلیاں اور مکڑیاں وغیرہ بھی کھاتے ہیں کچھ درختوں میں ایک بھوکے مارموسیٹ کے ذریعہ وقت کے ساتھ 1300 سوراخ ہوسکتے ہیں 
چونکہ یہ درختوں میں اونچے مقام پر رہتے ہیں، لہذا انھیں خاص طور پر عقاب اور دوسرے پرندوں سے خطرہ ہوتا ہے۔ نیز بہت سارے سانپ ایسے ہیں جو درختوں پر چڑھتے ہیں جیسے پٹ وپر یہ نھی انھیں نقصان پہنچاتے ہیں۔۔ پگمی مارموسیٹ کی رفتار اور چھپنے کی اہلیت ان شکاریوں کے خلاف اس کا واحد دفاع ہے۔
ایک نوزائیدہ پگمی مارموسیٹ کا وزن. 4اونس ہوتاہے یعنی کسی بالغ انسان کے انگوٹھے کے سائز کے برابر۔زندگی کے پہلے دو ہفتوں کے دوران یہ اپنے والد کی پشت پر سوار ہوتا ہے۔جب کھانے کا وقت ہوتا ہے تو والد بچوں کو ماں کے پاس لے جاتا ہے تاکہ وہ ان کی پرورش کرسکے۔ پگمی مارموسیٹس 3 مہینے کی عمر میں کیڑوں اور درختوں کے پتے کھانا شروع کر دیتے ہیں ان کی اوسط عمر 12 سال ہوتی ہے۔ 
 

Add new comment

8 + 0 =