شمال مغربی نائیجیریا میں کیتھولک کاہن کو زندہ جلا دیا گیا۔

گزشتہ دنوں نائیجر یار یاست کے گاؤں کافین کورو میں مسلح افراد نے مقامی طور پر ایک کاہن کی رہائش گاہ کو آگ لگا دی، جو جل کر ہلاک ہو گیا۔
 اطلاعات کے مطابق کہ نائیجیریا کے گورنر الحاجی سانی بیلو ابوبکر نے اس حملے کو ”بے دین اور غیر انسانی“ قرار دیتے ہوئے اس کی مذمت کی ہے اور مقامی سیکورٹی ایجنسیوں کو حملہ آوروں کا تعاقب کرنے کی ہدایت کی ہے۔انہوں نے کہا، اس طرح سے ایک کاہن کو قتل کرنایہ ظاہر کرتا ہے کہ اب ہم محفوظ نہیں ہیں، یہ دہشت گرد اپنے دماغ کھو چکے ہیں، اور اس قتل عام کو روکنے کے لیے سخت کارروائی کی ضرورت ہے۔
اپنی موت کے وقت، وہ سینٹ پیٹر اور پال کیتھولک چرچ میں پیرش پریسٹ کے طور پر خدمات انجام دے رہے تھے۔ اس کے علاوہ، وہ اپنے علاقے میں کرسچن ایسوسی ایشن آف نائیجیریا (CAN) کی مقامی شاخ کے چیئرمین تھے۔

Add new comment

10 + 7 =